Kab tak chalou ge saath

kab tak chalo ge saath
hae rasta kathin
veeraniyaaN bhi ayeNgi
aur jam’ghatay kaheeN

sarma ki sard raat aur
garma ke garm din

barsoN ke yeh shumaar bhi
baRhtay haeN din ba’din

kab tak chalo ge saath
hae raasta kathin.

کب تک چلو گے ساتھ

کب تک چلو گے ساتھ
ہیں راستے کٹھن
ویرانیاں بھی ائیں گی
اور جمگٹھے کہیں

سرما کی سرد رات اور
گرما کے گرم دن

برسوں کے یہ شمار بھی
بڑھتے ہیں دن بہ دن

کب تک چلو گے ساتھ
ہے راستہ کٹھن۔۔۔